Skip to content

Labour Party Pakistan Press Conference / باباجان اور دیگر سیاسی کارکنوں کی رہائی کے لئے ملکی و عالمی مہم چلانے کا اعلان – لیبر پارٹی پاکستان

June 4, 2012

4 جون 2012ء کو لیبر پارٹی پاکستان کی لاہور میں پریس کانفرنس:

سیاسی کارکنوں کے خلاف انسدادِ دہشت گردی دفعات کا بلادریغ استعمال

باباجان اور دیگر سیاسی کارکنوں کی رہائی کے لئے ملکی و عالمی مہم چلانے کا اعلان

لیبرپارٹی پاکستان 20ممالک میں پاکستان کے سفارت خانوں کے باہر مظاہرے کرے گی۔ پارلیمنٹ کا گھیرائو ہوگا

محترم صحافی دوستو! آپ کی تشریف آوری کا شکریہ

لیبر پارٹی پاکستان کی فیڈرل کمیٹی کے ممبر باباجان اور چار دیگر افتخار حسین، راشد مہناس، عامر خان اورامیر خان ستمبر 2011ء سے گلگت جیل میں مقید ہیں۔ ان پر انسداد دہشت گردی کی دفعہ “۷-اے ٹی اے” کے تحت مقدمات قائم ہیں۔ بابا جان نے وادی ہنزا میں عطاء آباد جھیل کے ایشو کو قومی سطح پر متعارف کروانے کے لئے اہم کردار ادا کیا تھا۔ انہوں نے جھیل متاثرین کو معاوضہ دلوانے کی جدوجہد کی تو اگست 2011ء کو متاثرین عطاء آباد جھیل کے مظاہرے پر پولیس نے فائرنگ کی جس سے دو افراد باپ بیٹا ہلاک ہو گئے۔ گلگت حکومت نے واقعہ کے ذمہ دار پولیس افسران پر مقدمہ درج کرنے کے بجائے اس واقعہ کے خلاف احتجاج کرنے والوں کے خلاف جھوٹے مقدمات درج کیئے۔ باباجان اور ان کے ساتھیوں کو انہی جھوٹے مقدمات میں گرفتار کر کے 9ماہ سے جیل میں بند کررکھا ہے۔ فیصل آباد میں لیبر پارٹی پاکستان کے 6مزدور راہنمائوں فضل الٰہی،محمد اکبر کمبوہ، رانا ریاض، ملک اسلم، بابررندھاوا اور علی اصغر غفاری کو انسداد دہشت گردی کی عدالت نے 594سال کی مجموعی سزا سنائی ہی۔ اس سزا کے خلاف لاہور ہائی کورٹ میں اپیل دائر کی گئی ہے۔

لیبر پارٹی پاکستان آج سیاسی قیدیوں سمیت ملک بھر میں سیاسی کارکنوں، مظاہرین اور عام لوگوں کے خلاف انسدادِ دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمات درج کئے جانے کے بڑھتے رجحانات کے خلاف ایک ملکی و عالمی مہم چلانے کا اعلان کرتی ہے۔ 15-17جون کو کراچی میں تین روزہ بھوک ہڑتالی کیمپ کراچی پریس کلب کے باہر لگایا جائے گا۔ 20-27جون کے درمیان دنیا بھر کے 20سے زائد ممالک میں پاکستان کے سفارت خانوں کے سامنے احتجاجی مظاہرے منظم کئے جارہے ہیں۔ برطانیہ، امریکہ، آسٹریلیا، فرانس، جرمنی، سویڈن، پرتگال، سپین، یونان، ہالینڈ، بلیجئم، ڈنمارک، سوئٹرز لینڈ، بھارت ، سری لنکا، نیپال، بنگلہ دیش اور دیگر ممالک میں پاکستان کے سفارت خانوں کے باہر لیبر پارٹی پاکستان کے ممبران اور ہمدرد افراد زبردست احتجاجی مظاہرے کریں گے اوربابا جان سمیت دیگر سیاسی قیدیوں کی فوری رہائی کا مطالبہ کریں گے۔ 27جون سے 4جولائی تک پاکستان کے تمام بڑے شہروں میں لیبر پارٹی پاکستان احتجاجی مظاہرے، بھوک ہڑتالی کیمپ اور جلسے جلوس منعقد کرے گی۔جولائی کو اسلام آباد میں لیبر پارٹی پاکستان اوردیگر سیاسی جماعتوں کے کارکنان سیاسی کارکنوں کے خلاف دہشت گردی دفعات کے تحت مقدمات درج کرنے کے بڑھتے رجحانات کے خلاف پارلیمنٹ کا گھیرائو کریں گے۔ اس روز لیبر پارٹی پاکستان کے ہزاروں کارکن آبپارہ چوک سے پارلیمنٹ کی طرف مارچ کریں گی۔ 18جولائی کو اسلام آباد میں ایک ملٹی پارٹی کانفرنس کا انعقاد کیا جائے گا جس میں باباجان اور دیگر سیاسی قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ کیا جائے گا۔

وزیراعظم باربار یہ غلط بات کہتے ہیں کہ پاکستان میں کوئی سیاسی قیدی نہیں۔ صرف لیبرپارٹی پاکستان کے 14سیاسی قیدی گلگت اورفیصل آباد جیل میں بند ہیں۔ انسدادِ دہشت گردی کی دفعات کا بلادریغ استعمال کیا جارہاہے۔ بجلی بندش کے خلاف مظاہرہ ہو یا وکلاء جمہوریت کے لئے باہر نکلیں، مزدور بہتر تنخواہوں کے لئے مظاہرہ کریں یا عطا آباد جھیل متاثرین معاوضہ کے لئے جلوس نکالیں، انسدادِ دہشت گردی کا قانون فوری حرکت میں آجاتا ہے۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ انسدادِ دہشت گردی کے قانون کا غلط استعمال فوری بند کیا جائی۔ سیاسی کارکنوں اور مخالفین کے خلاف اس کا بلادریغ استعمال ختم کیا جائے۔ باباجان سمیت تمام سیاسی قیدیوں کو فوری رہا کیا جائے۔

لیبر پارٹی پاکستان نے ابھی جون اورجولائی کے تحریکی پروگرام کا اعلان کیا ہی۔ جولائی میں اس تحریک کا از سر نو جائزہ لے کر نئے اقدامات کا اعلان کیاجائے گا۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرنے والے :

یونس راہو جنرل سیکرٹری لیبر پارٹی پاکستان03003079179

فاروق طارق ممبر فیڈرل کمیٹی لیبر پارٹی پاکستان030084119450

ڈاکٹر بخشل تھلو جنرل سیکرٹری لیبر پارٹی پاکستان (سندھ)0344333388

عرفان چوہدھری صدر، نیشنل سٹوڈنٹس فیڈیریشن (پنجاب) 03467709088

رانا محمّد اسلم ممبر لیبر پارٹی پاکستان (پنجاب)

Labour Party Pakistan press conference held today at Lahore Press Club


Excessive and Unjust Use of Anti-Terrorism Act Against Political Activists


Announcement of National and International Protests for the release Baba Jan and other Imprisoned Political Activists


Labour Party Pakistan will picket the Pakistani Federal Parliament while international activists will picket Pakistani embassies in 20 countries around the world


Journalist Friends,

We thank you for your presence.

Baba Jan (member of the federal committee of Labour Party Pakistan) and four other activists, Iftikhar Hussain, Rashid Minhas, Amir Ali and Ameer Khan; have been imprisoned in various jails in Gilgit since September 2011. They have been charged under the anti-terrorism act. However, they have not committed any crime but are being victimized for their support of the Attabad Lake victims.

Baba Jan campaigned for the granting of compensation for the victims of the Attabad Lake disaster.

In August 2011, at one such protest, the police were instructed to disperse the crowd. At first there was a lathi-charge, after which tear gas was fired. Despite the police brutality, the protestors persisted in their peaceful demonstration, to which the police responded by firing bullets into the crowd. Afzal Baig, a young student was shot dead. When his father went to recover his body, he too was shot, and later died. Instead of charging the police officers and bureaucracy responsible for these murders, the Gilgit-Baltistan administration filed false-cases against more than 100 political activists, including Baba Jan. It is on these charges that Baba Jan has been imprisoned for the past 9 months.

Likewise, in Faisalabad, 6 labour activists; Fazal Elahi, Mohammed Akbar, Rana Riaz, Malik Aslam, Babar Randhawa and Ali Asghar Ghaffari; have been sentenced for 590 years in total, by an anti-terrorist court, again under the Anti-Terrorist Act. However, the Faisalabad 6 are not terrorists, but power-loom workers and labour activists. An appeal has been filed in the Lahore High Court. In this case, as well as that of Baba Jan, the anti-terrorist act is being abused.

The Labour Party Pakistan today announces a national and international campaign against the growing tendency to use the Anti-Terrorist Act against ordinary protestors, workers, peasants and political activists. We are announcing five actions of protest to take place over the next four months:

  • 15-17th June: 3 day hunger strike camp in front of Karachi Press Club, Karachi, Pakistan.
  • 20-27th June: An international week of action will take place during which activists will picket 20 Pakistani embassies around the globe.
  • 27th June- 4th July: A national Week of Action will take place during which the Labour Party Pakistan will carry out Protest Actions, Hunger Strike camps and Pickets across the country.
  • 4th July: Labour Party Pakistan along with activists from various political parties will march in the thousands to parliament from Aabpara chowk.
  • 18th July: A multi-party conference will take place in Islamabad focusing on the issues of Gilgit-Baltistan.

The Prime Minister of Pakistan repeatedly lies when stating that there are no Political prisoners in Pakistan. At present there are 14 political workers of the Labour Party of Pakistan languishing in prison cells in Faisalabad and Gilgit. The anti-terrorist act is being used unjustly. Whether citizens are protesting against load-shedding, lawyers for democracy, workers for fair wages or natural disaster victims for compensation as in the case of Attabad, the anti-terrorist law is immediately mobilized to stifle their voices.

We demand the immediate cessation of the misuse of the anti-terrorist act and the release of Baba Jan and the Faisalabad 6.

If our demands are not met, our protests will continue beyond July.Joint Press Conference

Younas Rahu, general secretary LPP

Bukhshal Thalho, general secretary LPP Sindh

Farooq Tariq, member federal committee LPP

Irfan Choudry, president National Students federation

Rana Mohammed Aslam, member LPP Punjab

No comments yet

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: