Skip to content

JKLF head Amanullah Khan condemns detention and torture of the Hunza Five

May 14, 2012

جموں کشمیر لیبریشن فرنٹ کے سپریم ہیڈ امان اللہ خان نے ہنزہ میں عطاآباد جھیل کے مسئلہ پر پرامن احتجاج کے دوران گرفتار ہونے والے باباجان اور دیگر نوجوانوں پر گلگت جیل میں ہونے والے تشدّد کے واقعات کی شدید  الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ گرفتار شدہ افراد پر بد ترین اور غیر انسانی تشدّد کو  فی الفور  بند کرتے ہوئے ان کو رہا کیا جائے۔ انہوں نے پر امن احتجاجی مظاہرین پر ذیر حراست تشدّد کو غیر انسانی، غیر قانونی اور غیر اخلاقی فعل سے تعبیر دیتے ہوئے گلگت بلتستان کی حکومت کو متنبہ کیا ہے کہ وہ اس طرح سے عوام کی آواز کو دبانے کی کوشش نہ کرے۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ عوامی مسائل پر احتجاج کسی بھی جگہ کے شہریوں کا بنیادی انسانی حق ہے۔ بجائے اس کے کہ عوام کا مسئلہ حل کیا جاتا اور لوگوں کے جائز مطالبات کو تسلیم کیا جاتا حکومت نے  مظاہرین اور ان کی قیادت کو جبر و تشدّد کا نشانہ بنانا شروع کر دیا جو کہ انتہائی شرمناک ہے۔ انہوں نے کہا کہ احتجاجی تحریک کے رہنماء باباجان اور ان کے ساتھیوں کی زندگیاں خطرے میں ہیں اس لئے فوری طور پر ان پہ جاری تشدّد کو بند کیا جائے وگرنہ مستقبل میں کسی بھی قسم کے ناخوشگوار واقعہ کی ذمہ دار گلگت بلتستان کی حکومت ہو گی۔

No comments yet

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: